Azan ke Baad ki Dua – اذان کے بعد کی دعا اور فضیلت

اذان کے بعد کی دعا کی تلاوت کے بعد، دعاؤں میں مشغول ہونے اور اللہ سے برکت حاصل کرنے کی سفارش کی جاتی ہے۔ اذان کے بعد کی یہ دعائیں مسلمانوں کے لیے اظہار تشکر، استغفار اور رہنمائی مانگنے کا ایک طریقہ ہیں۔ ان دعاؤں کو عبادت کی ایک شکل اور اللہ کا قرب حاصل کرنے کا ذریعہ سمجھا جاتا ہے۔

یہ دعائیں مختلف ہوتی ہیں، لیکن ان میں سے کچھ عام ہیں جن میں شیطان سے پناہ مانگنا، دعاؤں کی قبولیت کا مطالبہ کرنا، اور حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم پر درود حاصل کرنا شامل ہے۔ مسلمانوں کا ماننا ہے کہ اذان کے بعد کی ان دعاؤں میں مشغول ہونے سے بے شمار روحانی فوائد حاصل ہوتے ہیں اور ان کا اپنے خالق سے تعلق مضبوط ہوتا ہے۔

اذان کے بعد کی دعا

اَللّٰهُمَّ رَبَّ هٰذِهِ الدَّعْوَةِ التَّامَّةِ، وَالصَّلاَةِ القَائِمَةِ، اٰتِ مُحَمَّدَ نِ الْوَسِيلَةَ وَ الْفَضِيلَةَ، وَابْعَثْهُ مَقَامًا مَّحْمُودَ نِ الَّذِيْ وَعَدْتَّهٗ، اِنَّكَ لَا تُخْلِفُ الْمِیْعَادَـ

اذان کے بعد کی دعا کا ترجمہ

اے اللہ! اس بلند اذان کے سواۓ تجھے کوئی شریک نہیں، تو نے حضورِ نبی کو اور ان کے آل و اصحاب کو ایک عظیم مقام دیا ہے۔

حمد کرنے والے اللہ کو تعریف ہے۔

میں توبہ کرتا ہوں اور تیری طرف رجوع کرتا ہوں۔

اے اللہ! میں اپنے گناہوں سے بھی خوفزدہ ہوں، تو بخشنے والا اور رحم کرنے والا ہے۔

توبہ قبول فرمالے۔

اے اللہ! تجھ سے مدد، صدق اور رستگاری کی خواہش کرتا ہوں۔

اور یہ بھی چاہتا ہوں کہ محمدﷺ کو (آخرت میں) بلند مقام عطا فرما۔

یقیناً تو اپنے وعدے کا پورا اور قابل بھروسہ ہے

اذان کے وقت کی دعا

اَشْهَدُ اَنْ لَّا اِلٰهَ اِلَّا اللّٰهُ وَحْدَهٗ لَا شَرِیْکَ لَهٗ، وَاَشْهَدُ اَنَّ مُحَمَّدًا عَبْدُهٗ وَرَسُوْلُهٗ، رَضِیْتُ بِاللّٰهِ رَبًّا وَّ بِمُحَمَّدٍ رَّسُوْلًا وَّ بِالْاِسْلَامِ دِیْنًا

اذان اور اقامت کے درمیان کی دعا

اللَّهُمَّ رَبَّ هَذِهِ الدَّعْوَةِ التَّامَّةِ، وَالصَّلاَةِ الْقَائِمَةِ، آتِ مُحَمَّدًا الْوَسِيلَةَ وَالْفَضِيلَةَ، وَابْعَثْهُ مَقَامًا مَحْمُودًا الَّذِي وَعَدْتَهُ

اذان کے بعد درود پڑھنا

درود محبت، احترام اور شکرگزاری کی علامت کے طور پر نبی صلی اللہ علیہ وسلم پر درود و سلام بھیجنے کا ایک طریقہ ہے۔ درود کی مختلف صورتیں ہیں جو پڑھی جا سکتی ہیں لیکن عام طور پر پڑھی جانے والی درود میں سے ایک یہ ہے:

اللهم صلّ على محمد وعلى آل محمد

اذان کے بعد ہاتھ اٹھا کر دعا کرنا

مسلمانوں کا عقیدہ ہے کہ اذان کے بعد ایک خاص وقت ہوتا ہے جب دعاؤں کے قبول ہونے کا زیادہ امکان ہوتا ہے اور اللہ کی رحمتیں اور برکتیں بہت زیادہ ہوتی ہیں۔

اس دوران ہاتھ اٹھانا اور دعا کرنا عقیدت کا ایک عمل اور اللہ کی رحمت اور اس کے بندوں کی دعاؤں کے جواب میں بھروسے کے اظہار کے طور پر دیکھا جاتا ہے۔

اذان کے بعد کی اس دعا کے دوران، افراد اپنی مخصوص ضروریات کے لیے دعا کر سکتے ہیں، اللہ کی نعمتوں کے لیے اس کا شکر ادا کر سکتے ہیں، برائی سے حفاظت طلب کر سکتے ہیں، استغفار کر سکتے ہیں، اور ان کے دلوں میں کوئی بھی ذاتی درخواست کر سکتے ہیں۔

یہ نوٹ کرنا ضروری ہے کہ جب کہ اذان کے بعد مخصوص دعائیں تجویز کی جاتی ہیں، لوگوں کو ذاتی دعاؤں میں مشغول ہونے اور اپنے الفاظ اور زبانوں میں اللہ سے جڑنے کی آزادی ہے۔

اذان سے پہلے کی دعا

جی ہاں! اذان سے پہلے دعا کرنا جائز ہے؛ بلکہ یہ وقت اوقاتِ قبولیت میں سے ہے، ایک حدیث میں ہے کہ دو گھڑیاں ایسی ہیں جن میں آسمان کے دروازے کھلے ہوتے ہیں،

اس وقت دعا رد نہیں کی جاتی ان میں سے ایک اذان کا وقت ہے؛ لیکن یہ ایک انفرادی عمل ہے اسے اجتماعیت کی شکل نہ دینی چاہیے اور نہ ہی مائک پر پڑھنا چاہیے۔

Conlusion

، نماز کے لیے اسلامی اذان، اور مسلمانوں کے لیے عبادت اور روحانی عکاسی میں مشغول ہونے کا ایک طریقہ ہے۔ واجب الاطاعت نہ ہونے کے باوجود، یہ دعائیں مومنوں کو اللہ سے برکت، تحفظ اور رہنمائی حاصل کرنے کا موقع فراہم کرتی ہیں۔

اذاذان کے بعد کی دعا پڑھنے کا عمل اسلام میں بھرپور روحانی روایت کا ایک لازمی حصہ ہے، جو ذہن سازی، عاجزی، اور دن بھر خالق کے ساتھ تعلق کے احساس کو فروغ دیتا ہے۔

یہ ایمان اور عقیدت کا ایک خوبصورت اظہار ہے جو ایک مسلمان کے روحانی سفر کو بڑھاتا ہے۔

FAQs

اذان کیا ہے؟

اذان نماز کے لیے اسلامی اذان ہے۔ یہ مسجد کے مینار یا لاؤڈ اسپیکر سے پانچوں فرض نمازوں کا اعلان کرنے کے لیے پڑھی جاتی ہے۔

اذان کے بعد کی دعائیں پڑھنے کے کیا فائدے ہیں؟

اذان کے بعد کی دعائیں پڑھنے کے کئی فائدے ہیں، جیسے کہ اللہ کا شکر ادا کرنا، استغفار کرنا، اور اس کا قرب حاصل کرنا۔ یہ ذہن سازی، عاجزی، اور دن بھر اللہ کی یاد کو بھی فروغ دیتا ہے۔

اذان کے بعد کتنی دیر بعد اذان کی دعا پڑھنی چاہیے؟

اذان کے بعد کی دعا پڑھنے کے لیے کوئی سخت وقت نہیں ہے۔ تاہم، اذان سننے کے بعد فوری طور پر ایسا کرنے کی ترغیب دی جاتی ہے۔

کیا میں اذان کے بعد کی دعا میں ذاتی درخواست کر سکتا ہوں؟

جی ہاں، آپ اذان کے بعد کی دعا کے دوران ذاتی درخواستیں کر سکتے ہیں اور اپنی ضرورت یا خواہش کے لیے دعا کر سکتے ہیں۔

2 thoughts on “Azan ke Baad ki Dua – اذان کے بعد کی دعا اور فضیلت”

Leave a Comment